Tooba Mein Jo Sab Se Oonchi Nazuk Seedhi Nikli Shaakh Lyrics in Urdu

طوبےٰ میں جو سب سے اونچی نازک سیدھی نکلی شاخ

مانگوں نعت نبی لکھنے کو روح قدس سے ایسی شاخ

مولیٰ گلبن رحمت زہرا سبطین اس کی کلیاں پھول

صدیق و فاروق و عثمان وحیدر ہر ایک اس کی شاخ

شاخ قامت شہ میں زلف و چشم و رخسار و لب ہیں

سنبل نرگس گل پنکھڑیاں قدرت کی کیا پھولی شاخ

اپنے ان باغوں کا صدقہ وہ رحمت کا پانی دے

جس سے نخل دل میں ہو پیدا پیارے تیری ولا کی شاخ

یاد رخ میں آہیں کرکے بن میں میں رویا آئی بہار

جھومیں نسیمیں نیساں برسا کلیاں چٹکیں مہکی شاخ

ظاہر و باطن اول آخر زیب و فروع و زین اصول

باغ رسالت میں ہے تو ہی گل غنچہ جڑ پتی شاخ

آل احمد خذبیدی یا سید حمزہ کن مددی

وقت خزان عمر رضا# ہو برگ ہدیٰ سے نہ عاری شاخ

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.