fatwa online | Islamic law | sharia law rules | Part 6

Mo Mansur Ker:

HASAN PATHAN:

ختم قرآن کی اجرت ناجاءز و حرام اور سخت گناہ کبیرہ ہے. لینے اور دینے والے دونوں توبہ و استغفار کریں. فتاوی شامی و بہار شریعت.
حضور صدر الشریعہ علیہ الرحمۃ والرضوان نے فرمایا کہ ایسی صورتوں میں ثواب ہی نہیں ملتا تو ایصال کس چیز کا

HASAN PATHAN:

علماءے کرام فرمایا جواز کی صورت یہ ہے کہ کسی عوض کی صراحۃ منع کردے پھر کچھ بخوشی دے تو لے سکتا ہے.

HASAN PATHAN:

یا وقت کی اجرت لے

HASAN PATHAN:

موجب نے نقص شیء کو صفات الہی( فضل و کرم) سے متصف کیا جو کہ بے محل اور تقاضاے فضل وکرم کے خلاف ہے. اور حکم یہ ہے کہ مصیبت اپنے نفس کی طرف منسوب کی جاءے. ارشاد باری تعالی ہے {وما أصابكم من مصيبة فبما كسبت أيديكم}،
[الشورى:30] وفي الآية الأخرى: مَا أَصَابَكَ مِنْ حَسَنَةٍ فَمِنَ اللَّهِ وَمَا أَصَابَكَ مِنْ سَيِّئَةٍ فَمِنْ نَفْسِكَ[النساء:79]،
اب اگر موجب نے تنز, طعن,ناشکری, یا ہنسی مذاق یاکسی اور باطل قصد سے کہا تو بہت ہی برا کیا کہ ذات و صفات سے نسبت میں ادنی سی توہین مستلزم کفر ہے.كما فی شرح العقاءد النسفیۃ “و من وصف اللہ تعالی بما لا یلیق…… یکفر”
اور اگر یہ قصد نہیں تب بھی توبہ لازم کہ نسبت شیء الی اللہ میں احتیاط از حد ضروری ہے.
اور کچھ بھی سوچے سمجھے بغیر جو دل میں آے اللہ رب العزۃ کی جانب کہے دینا بڑی جرءت ہے. لہذا قاءل توبہ و استغفار کرے.
ہاں اگر موجب کمال درجہ کا شاکر و صابر ہے اور ہر کمی و نقصان,تکلیف و آسانی, موت و حیات وغیرہ کو کرم الہی سے گردانتاہے جیساکہ اصفیا کا طریقہ رہا, تو کوءی حرج نہیں. بلکہ یہ قوی ایمان کی علامت ہے.
واللہ اعلم بالصواب.

 Aasif Razavi:

جزاك الله خيرا

Mo Taufiq:

لذت میے لے گیا وہ جام و مینا چھوڑ کر
میرا ساقی چل دیا خود میے کو تشنہ چھوڑ کر

کرڑہا کروڑ دلوں کی دھڑکنیں اچانک جیسے تھم سی گٸی ہوں ۔۔ آہ یہ کیا ہوا جہان علم و فن کاٸنات روحانیت کا آفتاب درخشاں چشم علم سے روپوش ہو گیا۔۔۔ حضور امیر اہل سنن آبروٸے اہل حق قامع صلح کلیت وارث علوم اعلی حضرت شمع درخشان طریقت زیب وزین مسند افتا تاج الشریعہ بدر الطریقہ شمس بازغہ ولایہ مفتی دیار ہندیہ امام السنیہ ماحی البدعات الرذیلہ حامی السنن النبویہ علامہ الشاہ الامام المفتی اختر رضا خان رضی عنہ اللہ المنان والرحمن وصال پر ملال یقینا جماعت اہل سنت کا وہ عظیم خسارہ اور ناقابل تلافی نقصان ہے جس کی بھرپاٸی قریب ناممکن نظر آرہی ہے ۔۔ آہ اب کس کی طرف رخ کریں۔ کس کے دل نشیں پر نور رونق وبہجت سے بھرپور چہرے کو مریدین ٹکٹکی باندھ کے دیکھیں گے ؟ وہ دلکش نظارہ جمال ازہری کی آب تاب کہاں تلاش کریں ۔۔ چاندوسورج کی تابناکیاں کہکشا کی جگمگاہٹ آبشاروں کی شفافیت جس چہرے کے آگے شرم سے ترجبیں ہو جاٸیں آہ ایسا وجہ منیر ومستنیر کہاں ڈھونڈیں ؟؟؟

اے خلاق ارض وسما اس مرد حق آگاہ اور مرشد با صفا پر تیری لامحدود رحمتوں سے بے پناہ رحمتیں نازل فرما ۔ تیرے فضل سے تیری جنت میں تیرے حبیب معظم فخر بنی آدم نور مجسم ﷺ کے جوار وقرب میں جگہ عطا فرما ۔ ان کے درجات بلند سے بلند تر فرما۔ اہل خانہ کو بالخصوص شہزادہ عالی وقار اچھے میاں سرکارعلامہ و مولانا سیدنا عسجد رضا خان مد ظلہ کو صبر جمیل عطا فرما ۔ مرشد برحق کے فیوض وبرکات سے جملہ مریدین کو خصوصا اور کل جہان اہل سنت کو عموما بامراد فرما

آمین بجاہ النبی الامین شفیع المذنبین ﷺ

جاروب کش آستانہ ازہری

محمد توفیق خان الرضوی المصباحی
پیٹلاد گجرات

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.