fatwa online | Islamic law | sharia law rules | Part 7

کیا ناءٹ پہن کر نماز پڑھ سکتےہیں مفتیانِ کرام ارشاد فرمائیں

Tahir Juna:

وہ ناٹٹ جو پینٹ کی طرح ہوتا ہے اور پورا پیر چھوپ جاتا ہے

اور اس میں کوئی جاندار کی تصویر نہیں تو اس میں نماز پڑھ سکتے ہیں

 Raza Razavi: ناءٹ ؟

 Mo Mansur Ker:

معاف فرما ءیں۔۔ناءٹ پینٹ

Mo Mansur Ker:

شکریہ جزاک اللہ

Tahir Juna:

سوال

مسجد میں صفائی کا کام چل رہا ہے
اور پانی سے مسجد کو دھو رہے ہیں

کیا معتکف اس وقت مسجد میں نہا سکتا ہے؟
بدن پہ پانی بہا لے یا سر دھولے؟؟؟؟؟؟

Aasif Razavi:

Assalamu alaikum
Zed ne 20 ramzaan ko sadqa e fitr ada kardiya
Ab us ka Sadqa ada hojaaega ?
K dusra dena hoga

Tahir Juna:

عید سے قبل تو کیا اگر رمضان المبارک سے پہلے صدقہ فطر ادا کیا تو بھی ادا ہو جائے گا

Tahir Juna:

فتاوی فیض الرسول
جلد 3
صفحہ 132

Tahir Juna:

میرے سوال کا مطلب یہ ہے کہ

مسجد میں صفائی کا کام چل رہا ہے اور چٹائی وغیرہ ہٹاکر پانی کا پائپ لائن کھینچ کر مسجد دھو رہے ہیں

تو اس وقت اسی پانی سے معتکف کا اپنے سر و بدن پر پانی ڈالنا کیسا؟

 Aasif Razavi:

منع کی وجہ مسجد کی چٹائی کا خراب ہونا نہیں بلکہ یہ حدیث ہے.

Tahir Juna:

وضو اور غسل جنابت کا میں نہیں پوچھ رہا

Aasif Razavi:

آپ نے اس سوال میں نہانے کا ذکر کیا ہے

 Tahir Juna:

اپنے سر و بدن پر پانی ڈالنا 👆👆

Hafiz Husain K:

ارے یار پلیز آپ لوگ پرسنل میں ڈسکس کریں سوال کیا ہو رہا ہے اور جواب کیا دیا جا رہا ہے

HASAN PATHAN:

اس طرح کے علمی سوال جواب میں کوئ قباحت نہیں.
کہ یہ گفتگو حوالوں سے مزین اور مسئلہ سے متعلق ہے.

​ابلیس کی بیوی کا نام ؟؟؟؟​

🌸امام اعظم رضی اللہ تعالی عنہ کے استاذ امام اعمش (سلیمان بن مہران) رحِمَہ اللہ بیان فرماتے ہیں کہ ایک آدمی امام شعبی (عامر بن شراحیل) رَحِمَہ اللہ کے پاس آیا اور پوچھا:
ابلیس کی بیوی کا نام کیا ہے ؟
آپ نے فرمایا:
اس شادی میں مَیں شریک نہیں ہوا تھا. !!
(سیر اعلام النبلاء للذھبی)

🌸سبق:🌸

اہلِ علم سے ایسے سوال کیجیے جن میں آپ کی آخرت, یا کم سے کم دنیا کا کوئی فائدہ ہو.
بے فائدہ اور لایعنی سوالات کر کے اپنا اور دوسروں کا وقت ضائع نہ کریں!!!!
🌸برکات رضا گروپ کا مقصد بھی صرف اور صرف یہی ہے کہ ہمیں شرعی مسائل کا حل معتبر کتب سے حوالہ کے ساتھ مل سکے 🌸

Molana Gulam Mustafa Panthora:

Mo Imam Garib:

اسلام علیکم کیا فرما تے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ زید کی بیوی دو بچوں کی ماں ہے اور ایک غیر مرد کے ساتھ ناجائز تعلقات کی وجہ سے اس کےساتھ بھاگ گئ اور زید نے طلاق دے دیا ہے جس کے ساتھ ناجائز تعلقات تھا اس کے ساتھ کورٹ میرج کیا تھا لیکن اب اس کو چھوڑ کر شوہر اول یعنی زید کے پاس آگئی ہے اور چار چھ ماہ سے ساتھ رہتی ہے اب زید کہتا کہ میں شرعی روپ سے لوٹانا چاھتا ھوں تو کیا ایسی صورت میں نکاح ثانی کیلیے حلالہ اور عدت کی ضرورت ہے مدلل جواب عنایت فرمائیں مولانا محمد تعظیم الدین امام غریب نواز مسجد بیڈیشور جامنگر گجرات

Mo Imam Garib:

شوہر اول نے باقاعدہ نہ رکھنے کے لئے تین طلاق دے دیا تھا اور جس کے ساتھ بھاگئ تھی اس کے ساتھ صرف کورٹ میرج ہی کیا ہے لہذا اب ایسی صورت میں حکم شرعی کیا ہے حلالہ اور عدت کی ضرورت ہے جواب عنایت فرمائیں

Mo Imam Garib: جلد از جلد جواب عنایت فرمائیں

 سوال : ایک شخص کی دو مرتبہ نمازجنازہ پڑھنا کیسا ہے؟؟؟؟ وضاحت فرمائیں!!!
اور اگر کسی گاؤں میں دو مرتبہ پڑھنے کا رواج ہو تو جنازہ میں شامل ہونے والے لوگوں کو کیا حکم دیا جائے گا ؟؟؟

HASAN PATHAN:

الجواب:
نماز جنازہ میں تکرار جائز نہیں ہے، البتہ اگر اذن ولی کے بغیر پڑھی گئی ہو تو ولی کو اعادہ کا حق ہے، اس صورت میں بھی جو لوگ پہلے پڑھ چکے ہوں ان کو ولی کے ساتھ دوبارہ پڑھنا جائز نہیں،
کیونکہ ایک مرتبہ نمازِ جنازہ پڑھنے سے فرض ساقط ہو جاتا ہے اور نمازِ جنازہ میں نفل مشروع نہیں ہے ۔
الدر المختار – (2 / 223)

( وإن صلى هو ) أي الولي ( بحق ) بأن لم يحضر من يقدم عليه ( لا يصلي غيره بعده ) وإن حضر من له التقدم لكونها بحق

 HASAN PATHAN:

الجواب صورت مسئولہ میں بغیر حلالہ نکاح جائز نہیں کہ کورٹ مریج, شرعی نکاح نہیں لفقدان شرط النکاح. ایسا ہی فتاوی علیمیہ ( ج ۲ ص ٥١ ) میں بالتفصیل مذکور ہے.
ہاں اگر کورٹ ہی میں پیپر ورک کے بعد یا کہیں پر بھی شرعی نکاح ہوا اور شوہر ثانی نے طلاق دے دی تو اب اس صورت میں عدت گزار کر (اگر مکمل نہ ہوئ ہو) نکاح کرلے حلالہ کی حاجت نہیں.
واللہ اعلم بالصواب.

Molana Abdul Halim Shahe Aalam:

اولا یہ معلوم کریں کہ شوہر اول نے کتنی طلاق دی تھی سوال میں واضح نھیں ہے

Molana Abdul Halim Shahe Aalam:

اچھا دوسرے میسیج میں واضح کردیا ہے جزاک اللہ خیرا

اور اگر کسی گاؤں میں دو مرتبہ پڑھنے کا رواج ہو تو جنازہ میں شامل ہونے والے لوگوں کو کیا حکم دیا جائے گا؟؟؟؟

Mufti Asgar Ali Razavi:

اس جواب میں یہ اضافہ ضروری ہے کہ شوہر ثانی نےنکاح شرعی بعد عدت کی ہو اور بعد جماع طلاق دی ہو
از حکم مفتی حسن

Aaj kal ye riwaaj ziyada he
K marhum K isale sawaab K liye 10 15 quraan mangte he or hadya 200 300 rupiya
De dete he
To kya kya jaae
Bara e karam rahnumayi farmaaiye

 کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ زید ایک سنی اوراپنے آپ کو مصباحی کہتا ہے حافظ تھا مگر اب بھول گیا ہے، اکثر پکا وہابی، دیوبندی کے ساتھ گھنٹوں بیٹھتا ہے اسکے ساتھ چائے وغیرہ بھی پیتا ہے اورسلام کلام بھی کرتا ہے، دریافت طلب مسئلہ یہ ہے کہ زید کا ایسا کرنا از روئے شرع کیسا ہے اور شریعت کے مطابق کیا حکم ہے مدلل جواب عنایت فرماکر عند اللہ ماجور ہوں ساتھ ہی عوام الناس کے لیے زید کے تعلق سے کیا حکم ہے، قرآن و حدیث کی روشنی میں مدلل اور مفصل جواب عنایت فرمائیں

Aasif Razavi:

الجواب : اگر یہ واقعتا ثابت ہے تو زید بے قید شدید گناہ گار ہے . اللہ تعالی تو یوں فرمائے : ”و اما ينسينك الشيطن فلا تقعد بعد الذكرى مع القوم الظلمين “ یعنی پھر اگر شیطان تجھے بھلاوا دے تو یاد آئے پر ظالموں کے ساتھ مت بیٹھ . اور یوں فرمائے : ” ولا ترکنوا الی الذین ظلموا فتمسکم النار “ یعنی کہ ظالموں کی طرف نہ جھکو کہ تمہیں آگ چھوئے گی. حضور صلی اللہ علیہ وسلم تو یہ فرمائیں کہ ایاکم و ایاھم لا یضلونکم ولا یفتنونکم یعنی کہ ان سے الگ رہو , انہیں اپنے دور رکھو ‘وہ تمہیں بہکا نہ دیں , وہ تمہیں فتنے میں نہ ڈال دیں . (صحیح مسلم) اور کبھی اس طرح فرمائیں کہ لا تجالسوھم و لا تشاربوھم و لا تواکلوھم و لا تناکحوھم یعنی کہ ان کے پاس نہ بیٹھو , ساتھ کھانا نہ کھاؤ , ساتھ پانی نہ پیو , شادی بیاہ نہ کرو (عقیلی عن انس) اور اس کہلانے والے مصباحی کے دل میں اللہ و رسول کی اتنی ہی عظمت ہے کہ جس سے خدا و رسول منع کریں اس سے یہ ملتا جلتا ہے, اس سے مل بیٹھ کر خورد و نوش کرتا ہے ! مگر اس کے باوجود جب تک زید کا عقیدے میں ان کا معاذ اللہ ہم خیال ہونا تحقیق سےثابت نہ ہوجائے , اس پر کفر کا حکم صادر نہیں ہوسکتا ہے. کما فی الفتاوی المصطفویہ . ہاں ! اسے بد مذہبوں سے دور رہنے کی تلقین کی جائے. اولا حتی الامکان اسے نرمی سے سمجھایا جائے؛ ممکن کہ اس کے دل میں یہ نصیحت اثر کرجائے . اور اس کے بعد بھی اگر باز نہ آئے تو سماج کے سر براہ اس کا مقاطعہ کریں اور عوام الناس کو اس کے ساتھ ملنے جلنے پر سختی کے ساتھ پابندی عائد کردیں یہاں تک کہ وہ اس حرکت سے باز آجائے اور بد بذہبوں کے ساتھ ملنا جلنا بند کردے. فقہائے کرام مقتدَیٰ لوگوں کے لیے بلا ضرورت شرعی صرف میل جول کو بھی مکروہ فرماتے ہیں نہ کہ معاذ اللہ ان کے ساتھ سلام کلام کرنا , دوستانہ رویہ کرنا , خورد و نوش کرنا . چنانچہ رد المحتار اور عالمگیری میں ملتقط سے ہے : یکرہ للمقتدی المشہور الاختلاط برجل من اھل الباطل و الشر الا بقدر الضرورۃ لانہ یعظم امرہ بین الناس . واللہ تعالی اعلم

Aasif Razavi: کتبہ محمد مزمل برکاتی
خادم الافتا بدار العلوم الغوث الاعظم , فوربندر , گجرات

Aasif Razavi: جزاك الله خيرا

Aasif Razavi: سوال :– زید نے بکر سے پوچھا کہ کاروبار کیسا چل رہا ہے بکر نے جواب دیا ” اللہ کے فضل و کرم سے ابھی کم ہے یا بند ہے” دریافت طلب امر یہ ہے کہ بکر کا اس طرح کا جواب دینا کیسا ہے.

 Assalamu alaikum
Hazraat
Is mas’ale ka jawab abhi
Tak nahi aaya
Bara e karam inayat farmaaiye

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.