Mufti e Azam ki Shan by Mufti Ashraf Burhani

گنہ گاروں کو ہاتف سے نوید خوش مآلی ہے

گنہ گاروں کو ہاتف سے نوید خوش مآلی ہے

مبارک ہو شفاعت کے لئے احمد سا والی ہے

قضا حق ہے مگر اس شوق کا الله والی ہے

جو ان کی راہ میں جائے وہ جان الله والی ہے

ترا قد مبارک گلبن رحمت کی ڈالی ہے

اسے بوکر ترے رب نے بنا رحمت کی ڈالی ہے

تمہاری شرم سے شان جلال حق ٹپکتی ہے

خم گردن بلال آسمان ذوالجلالی ہے

زہے خود گم جو گم ہونے پہ یہ ڈھونڈھے کہ کیا پایا

ارے جب تک کہ پاتا ہے جب ہی تک ہاتھ خالی ہے

میں اک محتاج بے وقعت گدا تیرے سگ در کا

تری سرکار والا ہے ترا دربار عالی ہے

تری بخشش پسندی عذر جوئی توبہ خواہی سے

عموم بے گناہی جرم شان لا ابالی ہے

ابوبکر و عمر عثمان و حیدر جس کے بلبل ہیں

ترا سرو سہی اس گلبن خوبی کی ڈالی ہے

رضا# قسمت ہی کھل جائے جو گیلاں سے خطاب آئے

کہ تو ادنیٰ سگ درگاہ خدام معالی ہے

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.