عارف باللہ حضرت مولانا حکیم محمد اختر صاحب رحمۃ اللہ علیہ نے ایک لطیفہ سنایا کہ
ایک بادشاہ تها اس نے اعلان کیا کہ جو ہمارے ہاتهی کو رُلادے اس کو ہم بهت انعام دیں گے، بڑے بڑے مصیبت زدہ آئےاور ہاتهی کے کان میں اپنی اپنی مصیبتیں سنائی مگر ہاتهی بالکل نہیں رویا، ایک مولوی صاحب آئے اور ہاتهی کے پاس جاکر نہ جانے اس کے کان میں کیا کہا کہ جیسے ہی مولوی صاحب کی بات سنی تو ہاتهی زارو قطار رونےلگا، لوگوں کو تعجب ہوا کہ آخر مولوی نے ایسا کیا کہہ دیا کہ ہاتهی رونے لگا، مولوی صاحب سے لوگوں نے کہا کہ آخر آپ نے اسکو کہا کیا کہ وه رونے لگا؟؟ مولوی صاحب نے کہا کہ میں نے صرف اسے اپنی تنخواہ بتائی کہ اتنی ہے !! مولوی کی تنخواہ سن کر ہاتهی درد سے چیخ اُٹها، مگر ہمارے ٹرسٹی اور متولی کو کوئی درد نہیں.

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.